ڈرامہ سیریل کسک رہے گی: اپنے بچے کے بدلے ایمان کو طلاق دینے کے لیے تیار ہوں

ڈرامہ سیریل کسک رہے گی: اپنے بچے کے بدلے ایمان کو طلاق دینے کے لیے تیار ہوں

February 2, 2019 | 512 Views

جب انسان اپنی عقل کو عقلِ کل سمجھنے لگے تو اسے اس کے حال پر چھوڑ دینا چاہیئے کیوں کہ وہ اسی عقل کل سے دھوکہ کھانے بعد اپنا سا منہ لیکر بیٹھ جاتاہے ۔ ٹی وی ون کے ڈرامہ سیریل  کسک رہے گی  میں  ایمان اور دانیال دونوں ہی اپنے آپ کو نہایت ہی سمجھدار اور ہوشیار سمجھتے ہیں   اور اسی لیے  ان کے آگے کسی کی بات کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔

ڈرامہ کے آغاز میں  ایمان کی امی اسے سمجھانے کے ناکام کوشش کرتی ہیں کہ ایمان اب بھی وقت ہے سدھر جاؤ یہ نا ہو کہ بہت دیر ہو جائے ۔  ایمان اپنی امی کی بات سن کر  غصہ سے لال پیلی ہو جاتی ہے۔  ایمان کی چھوٹی بہن حفصہ بھی اسے سمجھاتی ہے کہ تم کسی کی پرواہ نہ کرو مگر اپنے اندر پلنے والی ایک ننھی جان کی خاطر  اپنا ارادہ تر کر دو۔  دانیال فصیح سے ایمان کو طلاق دینے کے لیے کہتا ہے اور فصیح دانیال کو کھری کھری سناکر فون پٹخ دیتا ہے۔

دانیال ایمان کو لیکر فصیح کے  دوست کے گھر پہنچ جاتا ہے ۔  فصیح ایمان اور دانیال کو ایک ساتھ دیکھ کر  ہکا بکا رہ جاتا ہے۔ دانیال اورایمان دونوں  اس پر زور دیتے ہیں کہ ابھی اور اسی وقت طلاق دو اور ہماری جان چھوڑو۔  اسی دوران دونوں کے درمیان  تلخ کلامی ہوجاتی  ہے ، ناصرہ بیگم بھی فصیح سے ملنے وہاں پہنچ جاتی  ہیں۔ ایمان کے والد اس کے اس رویہ سے نہایت خوفزدہ ہوتے ہیں کہ کہیں اس کی ان حرکات کی وجہ سے  انہیں ذلت اور رسوائی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

ایمان  گھر میں ایک ڈرامہ رچاتی ہے تا کہ فصیح کے بچے سے جان چھڑا سکے مگر وہ اس میں ناکام ہوجاتی ہے۔  فصیح اور ایمان دونوں ایک دوسرے سے وعدہ کرتے ہیں کہ  اگر تم بچے کو جنم دے دو تو میں تمہیں طلاق دے دوں گا۔  اور اسی طرح سات ماہ گزر جاتے ہیں۔۔۔۔۔

Advertisement