ڈرامہ سیریل مریم پریرا: کیا مریم پریرا علی سے شادی کے لیے رضامند ہوگی؟

ٹی وی ون کے ڈرامہ سیریل  مریم پریرا کی نئی قسط آن ایئر کی گئی ، نئی قسط کے آغاز میں حاکم علی خان  جرگے میں مریم اور علی کو پیش کرتا ہے ، اور جر گہ یہ فیصلہ کرتا ہے کہ مریم  اور علی کو ایک دوسرے سے الگ کر دیا جائے ۔ حاکم خان مریم پر احسان جتانے والے انداز میں کہتا ہے کہ جو حرکت تم نے کی وہ معافی کے قابل نہیں پھر بھی تمہاری جان بخشی کر رہے ہیں۔

مریم پریرا حاکم خان کو مخاطب کر کے کہتی ہے کہ آپ چاہے میری جان لے لیں مگر میں کرسچن کالونی پر کوئی آنچ نہیں آنے دوں گی۔  دوسری جانب  علی  کے نام پر بیٹھی پھول بی بی علی کے ہاتھ سے نکلنے پر سراپا احتجاج ہوتی ہے، اور ساتھ ہی علی کی ماں  بھی اس کی مریم کی جانب جھکاؤ سے شدید پریشان ہوتی ہیں۔

  جینی مریم کو ڈھونڈتے ہوئے علی کی حویلی جا پہنچتی ہے ، اور وہاں اسے معلوم ہوتا ہے کہ مریم تو یہاں ہے ہی نہیں۔ وہ یہ بات سن کر نہایت پریشانی کے عالم میں واپس چلی جاتی ہے۔  علی  مریم کے گھر جاتا ہے جہاں اس کا بھائی اسے بتاتا ہے کہ مریم تو اب تک گھر واپس نہیں آئی ۔  علی واپس اپنے گھر آتا ہے اور اپنے باپ سے پوچھتا ہے کہ بتائیں مریم کو کہاں چھپا کر رکھا ہے۔  حاکم خان مریم کی گمشدگی سے لاعلمی کا مظاہرہ کرتا ہے۔

صادق خان ایک بار پھر کرسچن کالونی پر دھاوا بولتا ہے اور اب کی بار آگ لگانے کی غرض سے وہاں جاتا ہے ۔ اسی دوران وہاں حاکم خان بھی پہنچ جاتا ہے  جو مریم اور اس کے خاندان کو ڈرانے دھمکانے میں مصروف ہوتا ہےکہ علی بھی وہاں آجاتا ہے اور حاکم خان اور پوری کرسچن کالونی کے سامنے  مریم سے نکاح کرنے  کا اعلان کرتا ہے اور یہ بات سن حاکم خان غصے کے عالم میں وہاں سے روانہ ہو تاہےْ۔