ڈرامہ سیریل مریم پریرا : محبت حاصل ہوجائے تو اس سے بڑی کوئی نعمت نہیں۔۔۔

ڈرامہ سیریل مریم پریرا : محبت حاصل ہوجائے تو اس سے بڑی کوئی نعمت نہیں۔۔۔

December 6, 2018 | 668 Views

محبت ایک ایسی چیز ہے جو کہ اگر حاصل ہوجائے تو دنیا میں اس بڑی کوئی نعمت نہیں ہوتی اور اگر بالفرض اس کا حصول مشکل ہو جائے تو یہی محبت ایک آگ کی مانند بن جاتی ہے ، پھر یہی آگ اپنے سامنے آنے والوں کو نہیں دیکھتی بلکہ ہر کسی کو جلا کر راکھ کا ڈھیر بنادیتی ہے۔ یہ خلاصہ ڈرامہ سیریل مریم پریرا کی نئی قسط کا کہ جس میں سفیان مریم کے ٹھکرائے جانے کے بعد وطن چھوڑ کر جانے کو تیار ہوتا ہے۔

ضرور پڑھیں: ڈرامہ سیریل مریم پریرا: محبت اور جنگ میں سب جائز ہے؟؟

مریم پریرا اور اس کی چھوٹی بہن  جینی کے درمیان ایک بار تنازعہ سر اٹھا لیتا ہے۔ جینی ہمیشہ کی طرح اپنے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کا  قصوروار مریم کو ٹھہراتی ہے۔ دوسری جانب  سفیان کی بہن حفصہ مریم کے گھر آتی ہے اور اسے سفیان کے ملک چھوڑ کر جانے کے بارے میں آگاہ کرتی ہے اور مریم سے اپیل کرتی ہے کہ وہ اسے روک لے۔ لیکن مریم صاف کہہ دیتی ہے کہ میں ذمہ داریوں کو فراموش نہیں کرسکتی اور اب یہ قصہ تمام ہوا۔

ضرور پڑھیں: ڈرامہ سیریل مریم پریرا: مریم اور سفیان کی راہیں جدا ہوگئیں

علی مریم کے کالج نہ آنے کی وجہ اس کے گھر پہنچ جاتا ہے ۔ اور مریم علی کے ساتھ کالج جانے کے لیے باہر نکلتی ہے اور  صادق خان ان دونوں کو ایک  ساتھ جاتا دیکھ لیتا ہے اور یہ دیکھ کر اس کے تن بدن میں آگ لگ جاتی ہے۔  جینی کو ایک بار پھر سے مریم پر کھل کر تنقید کرنے کا موقع ملتا ہے اور وہ کھل کر اس کی برائی کرتی ہے۔ سفیان مریم کے گھر جاتا ہے اور اس کی ماں سے معافی مانگتا ہےا ور ساتھ یہ بتاتا ہے کہ وہ آج رات کی فلائٹ سے بیرون ملک جارہا ہے ہمیشہ کے لیے۔

ضرور پڑھیں: ڈرامہ سیریل مریم پریرا: محبت اور جنگ میں سب جائز ہے؟؟

پیٹر اور جینی کے ملاقاتوں کا سلسلہ جاری ہے ۔  جینی پیٹر سے فوراً شادی کا مطالبہ کرتی ہے اور پیٹر ہر بار کی طرح اس مرتبہ بھی اس کو بھہلاپھسلاکر بات گول کر جاتا ہے۔  جینی جو کہ پیٹر کے عشق میں بری طرح گرفتار ہے اسے معلوم ہی نہیں کہ پیٹر اس سے صرف وقت پاس کر رہاہے۔

Advertisement