ڈرامہ سیریل ادھوری کہانی: کسی آنے یا جانے سے زندگی رکتی نہیں۔۔۔

ٹی وی ون کے ڈرامہ سیریل ادھوری کہانی کی  قسط نمبر 20 نشر کی گئی ،  نئی قسط کے آغاز میں  تحسین اسد سے معافی مانگتی ہیں کہ انہوں نے بنا سوچے  ثنا سے شادی والی بات کا ذکر کیا۔  اسد ان کی معافی کو قبول کرتا ہے اور کہتا ہے کہ  میں  نے ثنا کی کبھی غلط نگاہ سے نہیں دیکھا۔ اسد ثنا کو بھی سمجھانے کی بھرپور کوشش کرتا ہے کہ  وہ شادی کی ضد چھوڑ دے مگر ثنا  بضد تھی کہ شادی کرے گی تو صرف اسد سے۔

ضرور پڑھیں: ڈرامہ سیریل ادھوری کہانی: کیا اسد اور ثنا مشکلات کے بھنور سے نکل پائیں گے؟

دوسری جانب شرجیل اور نتاشا دونوں سر جوڑ کر بیٹھ جاتے ہیں کہ آخر تحسین کو کس طرح معلوم ہوا کہ  شہزاد نتاشا کا رشتہ دارنہیں ہے۔ عالیہ آہستہ آہستہ   اسد کے دل پر قبضہ جما نے میں کامیاب ہو جاتی ہے۔  عالیہ اسد کو  اپنے گھر کھانے پر دعوت دیتی ہے۔  اسد زیبا سے ملنے کلینک جاتا ہے جہاں  زیبا کا ہاتھ تھامے ڈاکٹر  کو دیکھ کر اسد الٹے قدموں واپس آجاتا ہے۔

ضرور پڑھیں: ڈرامہ سیریل ادھوری کہانی: کیا اسد ثنا سے شادی کے لئے رضامند ہوگا ؟

تحسین ثنا کو کہتی ہیں کہ میں نے اسد کے دل میں  تمہارے لیے محبت دیکھی ہے۔ ثنا انہیں مخاطب کر کے کہتی ہے کہ اب مجھے اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا میں جو بھی کر رہی ہوں صرف اور صرف ثنا کی خاطر کر رہی ہوں اور اسد کو مجھ سے شادی کے لیے ماننا ہی پڑے گا ۔

ضرور پڑھیں: ڈرامہ سیریل ادھوری کہانی : کیا شرجیل کی نئی چال ہوگی کامیاب؟

ثنا ایک بار پھر اسد کے  سے شادی کا سوال کرتی ہے اور اسد غصے کے عالم میں جواب دیتاہے کہ وہ تم سے شادی نہیں کرے گا بلکہ وہ شادی عالیہ سے کرے گا،  یہ سن کر ثنا ہکا بکا رہ جاتی ہے۔  اسد اگلے روز زیبا کے آفس جاتا ہے جہاں  شرجیل  صاحب کو اپنا استعفیٰ پیش کرتا ہے ، شرجیل ایک بار پھر اپنا پیار محبت والا ڈھونگ شروع کرتے ہیں ۔  اور ساتھ ہی اسد زیبا کو طلاق دینے کی بری خبر بھی سنا دیتاہے۔